غیر مقامی صوبیداروں کی تعیناتی فیصلہ واپس لیا جائے

0

لنڈی کوتل سب ڈویژن میں باڑہ تحصیل کے صوبیداروں کی تعیناتی سے یہاں کے عوام سخت پریشان ہے ،اس طرح کے فیصلوں سے قوموں کے درمیان نفرت بڑھے گی ،ہماری اقوام کے صوبیداران قوم کے مزاج اور رسم وراج سے واقف ہے جو آسانی کے ساتھ مسائل حل کر سکتے ہیں ،باڑہ کے صوبیداروں کی تعیناتی کا فیصلہ واپس نہ لیا گیا تو سخت احتجاج شروع کرینگے ۔معراج الدین شینواری کی پریس کانفرنس
لنڈی کوتل پریس کلب میں سماجی کارکن معراج الدین شینواری نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ لنڈی کوتل سب ڈویژن میں باڑہ تحصیل سے تعلق رکھنے والے صوبیداروں کی طورخم سرحد اور چاروازگئی میں تعیناتی سے عوام کو سخت تکلیف کا سامنا ہے کیونکہ چاروازگئی کے مقام پر شینواری اور آفریدی اقوام کی خواتین کا مین شاہراہ ہے جس سے باپردہ خواتین کے لئے بڑا مسئلہ پیدا ہو جائے گا چونکہ باڑہ کے صوبیداراس علاقے کے رسم ورواج اور مزاج سے ناواقف ہے جس کی وجہ سے بڑے بڑے مسائل پیدا ہونے کا خدشہ ہے انہوں نے کہا کہ لنڈی کوتل تحصیل سے تعلق رکھنے والے صوبیدار کافی تجربہ کار ہے کیو نکہ یہ مقامی ہے اورعلاقائی مسائل سے بخوبی واقف ہے یہاں پر آئے روز ٹرانسپورٹ، زمین تنازعات اوردیگر مسائل سامنے اتے رہتے ہیں جو کہ دور دراز سے آئے ہوئے صوبیداروں کی بس سے باہر ہیں آخر میں انہوں نے دھمکی دی کہ لنڈی کوتل سب ڈویژن میں باڑہ تحصیل سے تعلق رکھنے والے صوبیداروں کی تعیناتی کا فیصلہ واپس نہ لیا گیا تو پاک افغان طورخم بارڈر کو بند کرینگے لنڈ ی کو تل بازار بند کردینگے اور سینکڑوں کی تعداد میں حاضر سروس خاصہ دار احتجاجا مستعفی ہو جائینگے کیونکہ یہ سنجیدہ اور حساس نوعیت کا کا مسئلہ ہے قوموں کا مزاق نہ اڑایا جائے ۔

About Author

Leave A Reply