139

صوبائی وزیر تعلیم کا شہباز گڑھی میں ہایئر سیکنڈری سکول کا افتتاح

صوبائی وزیر تعلیم محمد عاطف خان نے کہا ہے کہ یہ تاثر غلط ہے کہ صوبہ خیبر پختونخوا میں والدین اپنی بچیوں کو تعلیم و تربیت فراہم کرنے سے گریزاں ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ وہ صوبہ میں جہاں بھی جاتے ہیں وہاں پر والدین اپنی بچیوں کیلئے تعلیمی اداریں قائم کرنے کیلئے مطالبات پیش کرتے ہیں ۔ یہی وجہ ہے کہ انکی حکومت نئے قائم ہونیوالے تعلیمی اداروں میں 70فیصد لڑکیوں اور 30فیصد لڑکوں کیلئے مختص کررہی ہیں تاکہ انکے درمیان پائے جانیوالے فرق کو ختم کیا جاسکے۔ یہ بات انہوں نے جمعرات کے روز شہباز گڑھی مردان میں صوبائی حکومت ، یوکے ایڈ، اسٹریلین ا یڈ اور ہمقدم کے تعاون سے بننے والے گورنمنٹ گرلز ہائیر سیکنڈری سکول شہباز گڑھی مردان کے افتتاح کے موقع پر باتیں کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر ایم این اے مجاہد خان، منسٹر آف سٹیٹ فار ایشیا ء اینڈ پیسیفک آرٹی ہان مارک فیلڈ ، یو کے ایڈ اور آسٹریلین ایڈ کے عہدیداران بھی موجودتھے۔ پی ٹی آئی کی حکومت صوبے میں تعلیم کے فروغ کیلئے بڑی سنجیدگی سے کام کررہی ہے ۔ جس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتاہے۔ کہ صوبے میں تعلیم کا بجٹ 62بلین روپے سے بڑھا کر 139 بلین روپے تک پہنچا دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تعلیم ہی ترقی اور خوشحالی کا واحد راستہ ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں